ہندو انتہا پسندوں نے کانگریس رہنما سلمان خورشید کے گھر کو آگ لگا دی

بھارت میں ہندو انتہا پسندوں نے سینیئر کانگریس رہنما سلمان خورشید کا نینی تال میں گھر نذرِ آتش کر دیا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق آگ لگانے سے پہلے مبینہ انتہا پسند حملہ آوروں نے اُن کی رہائش گاہ میں توڑ پھوڑ بھی کی۔ پولیس کے مطابق آتش زنی کے واقعے میں 21 افراد کے خلاف مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

سلمان خورشید نے توڑ پھوڑ اور آگ لگنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر شیئر کی جس میں لپکتے ہوئے شعلے، جلے ہوئے دروازے اور کھڑکیاں دیکھی جا سکتی ہیں۔ واضح رہے کہ کانگریس رہنما اپنی نئی کتاب ’سن رائز اوور ایودھیا‘ کی وجہ سے انتہا پسند ہندوؤں کی طرف سے شدید تنقید کی زد میں ہیں۔

ان کی کتاب میں ایک جگہ پر ہندوتوا تنظیموں کا دہشتگرد گروپوں داعش اور بوکو حرام سے موازنہ کیا گیا ہے۔ کانگریس کے متعدد سینیئر رہنماؤں نے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ آگ لگانے والے ان پڑھ لوگوں کو یہ بھی نہیں معلوم کہ کتاب کس بارے میں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں