کلبھوشن کو اپیل کا حق دینے سے سزا یا ٹرائل پرکوئی فرق نہیں آئے گا: اٹارنی جنرل

اٹارنی جنرل پاکستان خالد جاوید کا کہنا ہےکہ کلبھوشن کو اپیل کا حق دینے سے سزا یا ٹرائل پرکوئی فرق نہیں آئے گا۔ جیونیوز سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے اٹارنی جنرل نے کہا کہ عالمی عدالت نے پاکستان کو کہا کہ آپ نے کلبھوشن جادھو کواپیل کا حق نہیں دیا، عالمی عدالت نے حکم دیا کہ کلبھوشن کو اپیل کا حق دینے کیلئے آئین میں ترمیم کریں یا نیا قانون بنائیں۔

انہوں نے کہا کہ کلبھوشن کو اپیل کا حق دینے سے سزا یا ٹرائل پرکوئی فرق نہیں آئے گا، اس نے بےگناہ پاکستانیوں کا قتل کیا۔

اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ اگربل نا آتا توبھارت پاکستان کو حکم عدولی پرعالمی عدالت انصاف اوراقوام متحدہ میں لے جاتا اور بل نا لانے پر اقوام متحدہ پاکستان پر پابندیاں عائد کرسکتا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں