کثیر الملکی بحری مشق امن 2021-میں شریک ممالک کی پرچم کشائی کی تقریب

اسلام آباد (ویب ڈیسک): کثیرالملکی بحری مشق امن2021- کی پرچم کشائی کی باوقار اور رنگارنگ تقریب پاکستان نیوی ڈاکیارڈکراچی میں منعقد ہوئی جس کے بعدمشق امن21- کی سرگرمیوں کا باقاعدہ آغازکردیا گیا۔پرچم کشائی کی تقریب میں شرکاءکی کثیر تعدادبشمول مشق میں حصہ لینے والے ممالک کے اعلیٰ عسکری نمائندگان،مندوبین،سفراءاور پاک بحریہ کے افسران و جوانوں نے شرکت کی۔ مشق کی افتتاحی تقریب کے دوران شریک اقوام کے پرچم بیک وقت لہرائے گئے۔تقریب کے دوران پاک بحریہ کے سربراہ ایڈمرل محمد امجد خان نیازی کا پیغام پڑھ کر سنایا گیا۔اپنے پیغام میں امیر البحر نے امن مشقوں کے سلسلے کی ساتویں مشق امن 21-کے شرکاءکا پُرجوش خیر مقدم کیا۔سربراہ پاک بحریہ نے اپنے پیغام میں کہا کہ یہ مشق نہ صرف میری ٹائم سیکیورٹی چیلنجز کا مقابلہ کرنے کے لیے نظریاتی ہم آہنگی کا وسیلہ ہے بلکہ مشق میں شریک مختلف ٹیکنالوجیز کی حامل بحری افواج کے درمیان مشترکہ آپریشنز کرنے کی صلاحیتوں میں اضافے کا باعث بھی ہے تاکہ یہ افواج متحد ہو کر پائیدار میری ٹائم ماحول کو یقینی بنائیں۔امیر البحر نے عالمی ذمہ داریاں نبھانے کے ساتھ ساتھ بحرِ ہند میں قومی مفادات کے تحفظ کے لیے اُٹھائے گئے پاک بحریہ کے ریجنل میری ٹائم سیکیورٹی پٹرول اقدام کا ذکر بھی کیا ۔ایڈمرل نے اپنے پیغام میں مزید کہا کہ مشق کے دوران پیدا ہونے والی ہم آہنگی میں مسلسل اضافہ ہو گا اوریہ مشق مشترکہ کاوشوں کے ذریعے علاقائی امن اور مشترکہ خوشحالی کے مقاصد کے حصول کے لیے ہمیں مزید قریب لائے گی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کمانڈر پاکستان فلیٹ، ریئر ایڈمرل نوید اشرف نے مشق کے شرکاءکو خوش آمدید کہا اور مشق میں پُرجوش شرکت پر اُن کا شکریہ ادا کیا۔ مشق کے اغراض و مقاصد کے حصول کے لیے انہوں نے مشق میں شریک تمام ممالک کے تعاون پر زور دیا اور اس امید کا اظہار کیا کہ یہ مشق سب کے لیے باہمی طور پرنتیجہ خیز ثابت ہوگی۔ کمانڈر پاکستان فلیٹ نے بحری افواج کے مابین مشترکہ آپریشنز کرنے کی صلاحیتوں کو بڑھانے کے ضمن میں مشق کی افادیت کو اُجاگر کیا۔ انہوں نے بحری امن و سلامتی کے لیے پاکستان کے عزم کی حمایت کرتے ہوئے مشق میں حصہ لینے والے ممالک کی شرکت کو سراہا ۔ کمانڈرپاکستان فلیٹ نے کہا کہ دنیا کے مختلف خطوں کے ممالک کے پرچموں کا ایک ساتھ لہرانا مشق کے نصب العین ”امن کے لیے متحد“ کی عملی عکاسی کرتا ہے۔یہ مشق امن مشقوں کے سلسلے کی ساتویں مشق ہے جو 11تا16فروری منعقد ہو رہی ہے۔ یہ مشق پاک بحریہ کی بڑی سرگرمیوں میں سے ایک ہے جو ہر دو سال بعد منعقد کی جاتی ہے اس مشق کا مقصد علاقائی اور غیر علاقائی بحری افواج کے ساتھ مل کر سمندروں کو مثبت انسانی سرگرمیوں کے لیے محفوظ بنا نا ہے ۔ رواں برس امن مشق میں لگ بھگ 45 ممالک اپنے بحری جہازوں، ایئر کرافٹس، اسپیشل آپریشن فورسز اور کثیر تعداد میں مندوبین کے ساتھ شریک ہو رہے ہیں۔علاوہ ازیں، نیشنل انسٹیٹیوٹ آف میری ٹائم افیئرزپاک بحریہ کے زیر انتظام 13تا15فروری 2021عالمی میری ٹائم کانفرنس بھی منعقد ہو رہی ہے۔انٹرنیشنل میری ٹائم کانفرنس میں محفوظ اور مستحکم سمندری ماحول میں بلو اکانومی کا فروغ مغربی بحر ہند کا مشترکہ مستقبل کے عنوان پرشہرت یافتہ قومی اور بین الاقوامی سکالرز اپنے خیالات کا اظہار کریں گے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں