کاشتکار گندم کی کاشت بروقت مکمل کر نے کی کوشش کریں، محکمہ زراعت

فیصل آباد: محکمہ زراعت نے کہا کہ کاشتکار بہتر پیداوار کے حصول کیلئے گندم کی کاشت زیادہ سے زیادہ20 نومبر تک مکمل کرنے کی بھر پور کوشش کریں اور بیماری سے پاک صحت مند، تصدیق و سفارش کردہ اقسام کے بیج کی کاشت کو ترجیح دی جائے تاکہ گندم کی بمپر کراپ کے حصول میں مدد مل سکے۔ڈائریکٹر محکمہ زراعت توسیع فیصل آباد چوہدری عبدالحمیدنے کہا کہ محکمہ زراعت کا عملہ کاشتکاروں و کسانوں کی معاونت، انہیں مفید مشوروں کی فراہمی اور رہنما اصولوں سے آگاہ کرنے کیلئے ہمہ وقت موجود ہے لہٰذا کسی بھی مسئلہ کی صورت میں محکمہ زراعت کے قریبی حکام سے فوری رابطہ کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے بہترین فصلوں کے حصول کیلئے کیمیائی کھادوں کے متوازن استعمال کی بھی ہدائت کی اور کہا کہ گندم کی بہتر کاشت اور اچھی پیداوار حاصل کرنے کیلئے فصل میں کھادوں کا استعمال زمین کی نوعیت کے مطابق محکمہ زراعت کے عملہ کی مشاورت سے کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ کمزور زمین میں بوائی کے وقت 2بوری ڈی اے پی، آدھی بوری یوریا 1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ، ڈیڑھ بوری یوریا1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ یا 5بوری سنگل سپر فاسفیٹ، اڑھائی بوری امونیم نائٹریٹ1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ یا 4بوری نائٹرو فاس1بوری پوٹاشیم سلفیٹ ڈالی جائے۔

انہوں نے مزید بتا یا کہ اوسط زرخیز زمینوں میں گندم کی بوائی کے وقت ڈیڑھ بوری ڈی اے پی، آدھی بوری یوریا1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ یا 4بوری سنگل سپر فاسفیٹ1بوری یوریا1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ کااستعمال کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ زرخیز زمینوں میں1بوری ڈی اے پی، آدھی بوری یوریا1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ یا اڑھائی بوری سنگل سپر فاسفیٹ، پونی بوری یوریا1بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ یا اڑھائی بوری سنگل سپر فاسفیٹ، سوا بوری امونیم نائٹریٹ، 1 بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ یا 2بوری نائٹرو فاس1 بوری پوٹاشیم سلفیٹ فی ایکڑ ڈال کر بہترین پیداوار حاصل کی جا سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ محکمہ زراعت کے توسیعی عملہ نے گاؤں گاؤں جا کر کاشتکاروں کو فنی رہنمائی اور تربیت کی فراہمی کاآغاز کردیاہے اور توقع ظاہر کی ہے کہ صوبہ پنجاب کے قابل فخر اور محنتی کاشتکار گندم کی بر وقت کاشت سے22ملین ٹن سے زائد کا پیداواری ہدف بآسانی حاصل کر لیں گے۔انہوں نے کہا کہ15نومبر کے بعد گندم کی کاشت کی صورت میں فی دن کے حساب سے پیداوار میں کمی آنا شروع ہو جاتی ہے۔انہوں نے کہا کہ کاشتکار گندم کی کامیاب فصل کے حصول کیلئے محکمہ زراعت کی منظور شدہ اقسام کا بیج استعمال کریں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب سیڈ کارپوریشن کے ڈیلرز کے ذریعے منظورشدہ اقسام کاتصدیق شدہ بیج کاشتکاروں کو مناسب قیمت پر فراہم کیا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ گندم کی بہترین پیداوار سے خوشحال پنجاب کا خواب شرمندہ تعبیر ہوگا۔ انہوں نے بتایاکہ گندم کی زیادہ پیداواری مہم کے سلسلہ میں ریڈیو پاکستان سے خصوصی زرعی نشریات کابھی آغاز کیاجارہاہے جس میں زرعی ماہرین کاشتکاروں کو گندم کی جدید پیداواری ٹیکنالوجی کے متعلق آگاہی اور سفارشات پر مبنی لیکچر دے رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں