چینی کا معاملہ صوبائی ہے، ترجمان وزارت خزانہ

کراچی: وزارت خزانہ کے ترجمان مزمل اسلم کا کہنا ہے کہ چینی کا معاملہ صوبائی ہے۔ کراچی میں میڈیا بریفنگ کے دوران ترجمان وزارت خزانہ کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت نے بہترین منصوبہ بندی سے چینی منگوائی، حکومت کے پاس اس وقت ایک لاکھ ٹن سے زائد چینی کا ذخیرہ موجود ہے، حکومت کے پاس 22 دن کا چینی اسٹاک موجود ہے، آئندہ چند روز میں 40 ہزار ٹن چینی سے بھرا جہاز کراچی کی بندرگاہ پر لنگر انداز ہوگا۔

چینی کی ایکس مل قیمت کے معاملے پر شوگر ملز مالکان عدالتوں میں چلے گئے ہیں، پنجاب میں 20 نومبر تک کرشنگ شروع ہوگی جب کہ سندھ میں ابھی تک کوئی شوگر مل نہیں چلی، سندھ میں شوگر ملز کے خلاف کوئی کارروائی بھی نہیں ہوئی، کرشنگ سیزن تاخیر سے شروع ہونے کا فائدہ اٹھایا جارہا ہے، اسی وجہ سے مارکیٹ میں افراتفری پھیلی اور چینی کی قیمت بڑھی۔

مزمل اسلم نے کہا کہ چینی کا معاملہ صوبائی ہے، سندھ حکومت نے چینی کی قیمت پر کنٹرول کے حوالے سے کچھ نہیں کیا جب کہ پنجاب میں چینی ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے، پنجاب نے یوٹیلیٹی اسٹورز کے لئے چینی 85 روپے کلو جاری کی، پنجاب کے سستے بازاروں میں چینی کی فی کلو قیمت 90 روپے ہے، سندھ حکومت کو چینی چاہیے تو وفاقی حکومت دینے کو تیار ہے لیکن سندھ حکومت وفاق سے نہ مدد مانگ رہی نہ ہی شوگر ملیں کھول رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں