چکوال: کٹاس راج مندر اور آنسوؤں کا تالاب

چکوال میں ایک ایسا مندر ہے جس کا سنگ بنیاد محبت کی کہانی نے رکھا اور یہاں ایک تالاب بھی ہے جس کے بارے میں مشہور ہے کہ یہ آنسوؤں سے بھرا گیا تھا۔

ڈھائی ہزار فٹ کی بلندی پر واقع کٹاس راج مندر کے ارد گرد چھوٹے بڑے 17 مندروں کے آثار ہیں تاہم یہاں صرف ایک مندر میں پوجا کے لیے مورتی موجود ہے۔ سنسکرت میں کٹاس کے معنی آنسوبھری آنکھیں ہیں۔

ہندو مذہب کے ماننے والے اس تالاب کو مقدس سمجھتے ہیں اور ان کا عقیدہ ہے کہ شیو دیوتا جو اپنی شریک حیات ستی سے بے انتہا محبت کرتے تھے ان کی وفات پر اتنا روئے کہ وہاں آنسوؤں کا تالاب بن گیا۔ یہ تالاب انتہائی مقدس سمجھا جاتا ہے اور تالاب کے نیلے پانی ميں سفيد بادلوں کا عکس جس کے نیلے پانی میں سفید بادلوں کا عکس دیکھنے والوں کو ایک سحر میں مبتلا کردیا ہے۔

یہاں کے حوالے سے ایک روایت یہ بھی ہے کہ شیو جی کی آنکھوں سے آنسو کی دو لڑیاں بہیں، ایک آنسو کٹاس پر گرا جبکہ دوسرا بھارت میں اجمیر کے مقام پر۔ ایک روایت کے مطابق وید کی مقدس کتاب کٹاس کی ایک کی سرنگ میں لکھی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں