پرانے انفراسٹرکچر کی وجہ سے گیس لیکج کا مسئلہ حل کرنے کے لئے آئندہ ماہ لائنوں کی بحالی کا منصوبہ شروع کر رہے ہیں، وفاقی وزیر برائے توانائی حماد اظہر کا قومی اسمبلی میں جواب

اسلام آباد۔: وفاقی وزیر برائے توانائی محمد حماد اظہر نے کہا ہے کہ ملک بھر میں پرانے گیس انفراسٹرکچر کی وجہ سے گیس لیکج کا مسئلہ حل کرنے کے لئے آئندہ ماہ ان لائنوں کی بحالی کا منصوبہ شروع کر رہے ہیں جس سے بڑی حد تک کراچی سمیت ملک کے دیگر شہروں میں گیس پریشر میں کمی کا مسئلہ حل ہو جائے گا۔

بدھ کو قومی اسمبلی میں وقفہ سوالات کے دوران سید حسنین طارق کے سوال کے جواب میں وفاقی وزیر محمد حماد اظہر نے کہا کہ سوئی ناردرن گیس کا یو ایف جی 8.5 تک لے آئے ہیں، سوئی سدرن کی اس حوالے سے صورتحال تسلی بخش نہیں ہے، گھریلو صارفین کی سطح پر یو ایف جی کی شرح بڑھ گئی ہے، گیس چوری کے خلاف اقدامات کے حوالے سے سندھ پولیس اور دیگر اداروں کے نظام کی بہتری کے لئے سندھ حکومت کے ساتھ رابطے میں ہیں،

سوئی سدرن کا یو ایف جی 15.5 فیصد تک پہنچ گیا ہے، دونوں گیس کمپنیوں کا یہ فرق بہت زیادہ ہے۔ فہیم خان کے سوال کے جواب میں وزیر حماد اظہر نے کہا کہ گیس کے مسئلے کے حل کے لئے دونوں گیس کمپنیوں کو ہدایت کی گئی ہے، گیس لیکج کے خاتمے کے لئے پرانی لائنوں کو بہتر کیا جائے، آئندہ ماہ سے یہ نیا منصوبہ شروع ہو گا، اس سے کراچی سمیت ملک کے دیگر شہروں میں گیس کا مسئلہ بڑی حد تک حل ہو جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں