پارلیمنٹ کا کل ہونے والا مشترکہ اجلاس مؤخر کردیا گیا

پارلیمنٹ کا کل ہونے والا مشترکہ اجلاس مؤخر کردیا گیا وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے ٹوئٹ کہا کہ انتخابی اصلاحات ملک کے مستقبل کا معاملہ ہے، ہم نیک نیتی سے کوشش کر رہے ہیں کہ ان معاملات پر اتفاق رائے پیدا ہو۔ ان کا کہنا تھاکہ اتفاق رائے کے حوالے سے اسپیکر اسد قیصر کو اپوزیشن سے ایک بار پھر رابطہ کرنے کا کہا گیا ہےتاکہ ایک متفقہ انتخابی اصلاحات کا بل لایا جا سکے۔ وفاقی وزیر اطلاعات کا کہنا تھاکہ پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس کو اس مقصد کیلئے مؤخر کیا جا رہا ہے اور ہمیں امید بھی ہے کہ اپوزیشن ان اہم اصلاحات پر سنجیدگی سے غور کرے گی اور ہم پاکستان کے مستقبل کیلئے ایک مشترکہ لائحہ عمل اختیار کر پائیں گے۔

ان کا کہنا تھاکہ ایسا نہ ہونے کی صورت میں ہم اصلاحات سے پیچھے نہیں ہٹ سکتے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز قومی اسمبلی اجلاس میں دو بلز کی تحریک پر حکومت کو شکست ہوئی تھی۔ مسلم لیگ ن کے جاوید حسنین نے امیدوار پر 7 سال تک انتخابی نشان تبدیل نہ کرنے کا بل پیش کیا جس کی حکومت نے مخالفت کی تھی۔ اسپیکر نے زبانی رائے شماری کی بنیاد پر بل کے خلاف فیصلہ دیا تو اپوزیشن نے چيلنج کیا۔ گنتی میں اپوزيشن کو 117 اور حکومت کو 104 ووٹ ملے جس پر ڈپٹی اسپیکر نے بل پیش کرنے کی اجازت دی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں