وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار عملی طور پر صوبے کی خدمت کر رہے ہیں ۔وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب کااسکول آف موٹیویشنل کی تقریب موقع پر میڈیا سے خطاب

لاہور۔: وزیر مملکت برائے اطلاعات فرخ حبیب نے کہا کہ وزیر اعلی پنجاب عثمان بزدار عملی طور پر صوبے کی خدمت کر رہے ہیں ،پنجاب حکومت نے 540 ارب روپے کے صوبہ میں یونیورسٹیوں،صحت سمیت دیگر بڑے پروجیکٹ پر خرچ کیے ہیں، عوام کو صحت کارڈ ،کسان کارڈ فراہم کیے جا رہے ہیں، اپوزیشن کو حکمت عملی بنانے کا پورا اختیار ہے، پہلے بھی کئی اتحاد بنتے رہے ہیں، اپوزیشن خود تو پہلے ایک ہو جائے، اپوزیشن سیاسی بیروزگاروں کا اجتماع ہے، وہ ہفتہ کے روز یہاں مقامی ہوٹل میں اسکول آف موٹیویشنل کی تقریب موقع پر میڈیا سے خطاب کر رہے تھے ۔

انہوں نے کہا کہ عوام کو سستی چینی کی فراہمی کے لیے اقدامات کیے گے ہیں ، شوگر ملز کے اسٹاک سے متعلق اقدامات پر حکومت کو حکم امتناعی کا سامنا ہے، پاکستان میں جمہوری عمل چلتا رہنا چاہیے، انکا کہنا تھا کہ موجودہ حکومت اپنی مدت پوری کرے گی، اس موقع پر ایم پی اے سعدیہ سہیل رانا ، اسکول آف موٹیویشنل کی انتظامیہ سمیت پی ٹی آئی کارکنان کی بڑی تعداد موجود تھی ۔

وزیر مملکت نے کہا کہ اپوزیشن این آر او کے لیے پہلے دن سے کوشاں ہیں، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اتحادیوں کے تحفظات کو دور کریں گے، حکومت بنانے کے لیے اتحاد کرنے پڑتے ہیں، سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ دس سال تک پنجاب میں کیٹ واک وزیراعلی رہے ۔

ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ تحریک لبیک پاکستان کے ساتھ سیاسی اتحاد سے متعلق کوئی بات زیر غور نہیں، انکا کہنا تھا کہ شہباز شریف پر 7 ارب روپے کے ٹی ٹیز اور 25 ارب کا جعلی اکائونٹ کا کیس ہے۔انہوں نے کہا کہ احتساب کا عمل جاری ہے، نواز شریف کی جائیدادیں نیلام ہو رہی ہیں۔

قبل ازیں مذکورہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے فرخ حبیب نے کہا کہ ہم نے بڑے کام کرنے ہیں اور اسی پاکستان میں کرنے ہیں، اپنے اپنے حصے کی ہم سب نے شمع جلانی ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان سے ہم نے ویل لفٹ کرنا سیکھا. ہمیں احساس کمتری کا شکار نہیں ہونا چاہیے۔

فرخ حبیب نے کہا کہ اپنا اپنا میچ نہیں کھیلنا بلکہ کرکٹ ٹیم کی طرح ایک بن کر پاکستان کا میچ کھیلنا ہے اور پاکستان کو آگے لے کر جانا ہے، انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس بہترین پروفیشنل اور ٹیلینڈ لوگ موجود ہیں ،ہمیں اپنے ویلیو ،کلچر اور اپنی زمین پر فخر کرنا چاہیے اور درگزر کرتے ہوئے لوگوں کے لئے آسانیاں پیدا کرنی چاہیے ،انہوں نے کہا کہ زندگی کاایک مقصد ہوتا ہے اور سب سے بڑا مقصد انسانیت کی فلاح کا مقصد ہوتا ہے، ہمیں تنقید برائے تنقید کی کی بجائے اصلاحی تنقید کرنی چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ بڑا آدمی ہمیشہ اپنی خواہشات کے خلاف لڑتا ہے ، سکول آف موٹیویشن کے بانی شہواز بلوچ ایک چلتی پھرتی داستان ہیں ،پاکستان کو ایسے ہونہار ثبوتوں کی ضرورت ہے, شہواز بلوچ اپنی بصیرت سے اس مقام پر پہنچا ہے، سکول آف موٹیویشنل ان کا بہت بڑا ادارہ ہے ۔

انہوں نے کہا کہ شہواز بلوچ نے اپنی کسی کمزوری کو اپنے راستے کی رکاوٹ نہیں سمجھا ،مذکورہ تقریب سے موٹیویشنل سپیکر قاسم علی شاہ ،سکول آف موٹیویشنل کے سربراہ امتیاز بلوچ ،اور شہواز بلوچ سمیت دیگر نے بھی خطاب کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں