نیشنل ایکشن پلان کے تحت پنجاب اور سندھ میں کالعدم تنظیموں کے مزید مدارس کو حکومتی تحویل میں لے لیا گیا

رسائی نیوز نمائندہ خصوصی لاہور:نیشنل ایکشن پلان کے تحت ملک بھر میں کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں، پنجاب اور سندھ میں آج مزید درجنوں مدارس کو حکومتی تحویل میں لے لیا گیا ہے، نیشنل ایکشن پلان کے تحت سندھ حکومت نے صوبے میں دینی مدارس کو خود چلانے کے فیصلے پر عملدرآمد شروع کردیا ہے جس کے تحت کالعدم تنظیموں کے 56 مدارس، مراکزِ صحت سمیت دیگر املاک کو سندھ حکومت کے کنٹرول میں لیا جارہاہے، مدرسہ جامعہ الدرسات الاسلامیہ کو سندھ حکومت نے اپنی تحویل میں لے لیا ہے۔ وزارت داخلہ کے مطابق مرید کے میں کالعدم تنظیم جماعت الدعوۃ اور فلاح انسانیت کے 8 مدارس کو تحویل میں لیا گیا جب کہ کالعدم جماعتوں کی ڈسپنسریاں ایمبولینس اور نرسنگ کالج کو بھی تحويل میں لے لیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان کے تحت 121 افراد کو حفاظتی تحویل میں لیا گیا، صوبوں میں 182 مدارس، 34 اسکولز، 5 کالج، 163 اسپتال، 184ایمبولنس اور 8 دفاتر تحویل میں لے گئے، کالعدم تنظیموں کے خلاف آپریشن جاری رہے گا جب کہ صوبوں کے ساتھ وزارت داخلہ مل کر کام کر رہی ہے۔ یاد رہے کہ گزشتہ روز وفاقی حکومت کے حکم پر کالعدم تنظیموں کے خلاف کریک ڈاؤن کے نتیجے میں اسلام آباد اور راولپنڈی میں کالعدم تنظیموں کے مساجد، مدارس اور اسپتالوں کو سرکاری تحویل میں لیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں