مقبوضہ کشمیر میں پُراسرار دھماکے میں شدید زخمی ہونے والے 10 سالہ بچے نے اسپتال میں دم توڑ دیا

رسائی نیوزویب ڈیسک: مقبوضہ کشمیر میں 10 سالہ بچہ اپنے والد کے ہمراہ ضلع پلوامہ کے آرمی کیمپ کے نزدیک مویشی چَرا رہا تھا کہ ایک پُراسرار دھماکے میں شدید زخمی ہوگیا جب کہ بچے کے والد محفوظ رہے۔10 سالہ عارف ڈار کو ضلعی اسپتال منتقل کیا گیا جہاں ابتدائی طبی امداد کے بعد سری نگر کے سی ایم ایچ اسپتال لے جایا گیا جہاں دوران علاج زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے معصوم بچے نے جام شہادت نوش کرلی۔بچہ بارودی سرنگ کے پھٹنے سے زخمی ہوا یا قریبی آرمی کیمپ سے بارودی مواد سے بچے کو نشانہ بنایا گیا تاہم حادثے کی نوعیت کا تاحال تعین نہیں کیا جا سکا ہے۔ پُراسرار دھماکے میں شہید ہونے والے بچے کی نماز جنازہ میں شرکت کے لیے مقامی افراد کے علاوہ جنوبی کشمیر سے بڑی تعداد میں لوگ پہنچے۔ شرکاء نے بھارت مخالف، جدوجہد آزادی کشمیر اور پاکستان کے حق میں نعرے بلند کیے۔ یاد رہے کہ 11 جولائی کو ضلع شوپیاں میں دھماکا خیز بارودی مواد سے کھیلنے کے دوران ہونے والے دھماکے میں ایک بچہ شہید اور 3 زخمی ہوگئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں