لاہور ہائیکورٹ میں بسنت کی اجازت دینے کے خلاف درخواست کی سماعت آج ہوگی

رسائی نیوزنمائندہ خصوصی لاہور: ایک روز قبل پنجاب کے وزیر اطلاعات فیاض الحسن چوہان نے پریس کانفرنس کے دوران بسنت پر عائد پابندی کے خاتمے کا اعلان کرتے ہوئے بتایا تھا کہ بسنت کے منفی پہلوؤں کے حوالے سے وزیراعلیٰ پنجاب نے کمیٹی تشکیل دی ہے۔درخواست گزار صفدر شاہین پیرزادہ ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا ہے کہ بسنت خونی کھیل کی شکل اختیار کر گئی تھی جس کی وجہ سے اس پر پابندی لگا ئی گئی تھی اب حکومت عوامی مسائل سے توجہ ہٹانے کے لیے بسنت جیسے کھیل کی اجازت دے رہی ہے۔صفدر شاہین پیرزادہ ایڈووکیٹ نے مزید کہا کہ گلے پر ڈور پھرنے سے بےشمار قیمتی جانیں ضائع ہوچکی ہیں اور پتنگ بازی سے اربوں روپے کی قومی املاک کا بھی نقصان ہوا، عدالت حکومت پنجاب کی جانب سے بسنت کی اجازت کا اقدام کالعدم قرار دے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں