عمران خان آج تک مجھ پر لگائے گئے الزامات کے ثبوت نہیں دے سکے: شہباز شریف

رسائی نیوز نمائندہ خصوصی اسلام آباد: قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے قائد حزب اختلاف نے کہا کہ چین ان چند ممالک میں شامل ہے جو ہر حال میں پاکستان کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑا رہتا ہے۔ سی پیک کو متنازع بنانے کی کوشش کی گئی جو ناکام ہوئی۔ شہباز شریف نے کہا کہ وزیراعظم کا بیان آیا کہ یوٹرن لینا بڑے لیڈرز کی حکمت عملی ہے، انہوں نے ہٹلر کا نام بھی لیا، اگر یوٹرن لینا بڑے لیڈر کی نشانی ہے توجوہری ملک کے بارے میں دنیا کیا سوچے گی، کون سا ملک ہم پر اعتبار کرے گا کہ یہ تو معاہدے کرکے یوٹرن لے لیں گے- وزیراعظم کے یوٹرن پرموقف سے پاکستان کا نقصان ہو رہا ہے، ان کے ہاتھ میں 22 کروڑ عوام کا مستقبل ہے ان کو چائیے سمجھداری کا ثبوت دیں- اپوزیشن لیڈر نے کہا کہ جب وزیراعظم غیر ذمہ دارانہ بات کریں گے تو ایوان میں بات ہو گی ، کوالالمپور میں وزیراعظم نے بیان دیا کہ پوری اپوزیشن جیل جائے گی، آپ ڈکٹیٹر نہیں بلکہ سلیکٹڈ وزیراعظم ہیں،آپ دھمکیاں کس کو دے رہے ہیں۔ ہمیں دھمکیاں نہ دی جائیں مشکل وقت کا سامنا کرنا جانتے ہیں۔ ہم نے آمروں کا مقابلہ کیامجھ پر ملتان میٹرو اور دیگر منصوبوں میں کرپشن کےالزامات لگائے گئے، آج تک ان الزامات کے ثبوت نہیں دیئے گئے –ۤمیں محترم عمران خان سے درخواست کرتا ہوں کہ اس شخص کا نام بتائیں جس نے ان کو بتایا کہ میاں نوازشریف نے این ار او مانگا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں