طاہر داوڑ قتل کیس کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحققیاتی ٹیم کے سربراہ کو تبدیل کردیا گیا

رسائی نیوزنمائندہ خصو صی پشاور:طاہر داوڑ قتل کیس کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحققیاتی ٹیم کے سربراہ کو تبدیل کردیا گیا ہے اور جے آئی ٹی کی سربراہی اب ایس پی سی آئی اے گلفام ناصر سے لے کر ڈی آئی جی آپریشن فیصل راجہ کو سونپ دی گئی ہے۔ نمائندہ رسائی نیوز کے مطابق طاہرداوڑ کیس ہائی پروفائل ہے اس لیے سینئر افسر کو جے آئی ٹی کی سربراہی سونپی گئی،چیف کمشنر اسلام آباد نے پشاور پولیس کے ایس پی طاہر داوڑ کے قتل کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی کا نوٹی فکیشن جاری کیا تھا جس کی سربراہی ایس پی سی آئی اے گلفام ناصر کو سونپی گئی تھی جب کہ جے آئی ٹی میں حساس ادارے کے افسران بھی شامل ہیں۔ اس سے قبل سولہ نومبر کو تھانہ رمنا میں طاہر داوڑ کے اغواء کے بعد درج ہونے والے مقدمے میں قتل اور دہشتگردی کی دفعات بھی شامل کردی گئی ہیں۔ یہ مقدمہ 28 اکتوبر کو طاہر داوڑ کے بھائی فرمان احمد دین کے مدعیت میں درج کیا گیا تھا۔ طاہر داوڑ کو سیکڑ جی ٹین سے نامعلوم افراد نے اغواء کیا تھا اور ان کے موبائل فون کی آخری لوکیشن سیکٹر ایف ٹین آئی تھی جس کے بعد ان کا موبائل فون بند ہوگیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں