شہبازشریف پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کی چیئرمین شپ سےعلیحدہ ہوجائیں : فواد چوہدری

رسائی نیوزنمائندہ خصوصی اسلام آباد:وفاقی وزیراطلاعات فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ عمران خان نے کرپشن کے خلاف 22 سال جدوجہد کی ہے اور یہ عمران خان کی ذاتی لڑائی نہیں بلکہ پاکستان کے لوگوں کی لڑائی ہے-انہوں نے کہا کہ یہ کہنا کہ کسی کو این آر اوملے گا، یہ ناممکن ہے کیوں کہ عمران خان کی حکومت میں کسی کو این آر او نہیں ملے گا، واضح کردیں نہ ڈیل ہوگی، نہ ڈھیل ہوگی،کرپشن کے مقدمات کو منطقی انجام تک پہنچائیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کی سینیئر قیادت نے پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں شہباز شریف کے کردار پر تشویش کا اظہار کیا ہے، شہباز شریف نے پی اے سی کا چیئرمین بننے کے بعد نیب کے لوگوں کو طلب کیا اور ان پر دباؤ ڈالا، جس سے واضح ہوگیا ہے کہ مسلم لیگ (ن) اور شہباز شریف پی اے سی کو بدعنوانی کے خلاف مقدمات میں ڈھال کے طور پر استعمال کررہے ہیں۔فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ ن لیگ کا پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کو ڈھال کے طور پر استعمال کرنا ناقابل قبول ہے، اب سعد رفیق کو کہا جارہا ہے کہ وہ بھی پبلک اکاؤنٹس کمیٹی میں آئیں تاکہ ان کو بھی ڈھال میسر آسکے۔انہوں نے کہا کہ آج نیب نے علیم خان کو گرفتار کیا جس پر انہوں نے اپنے عہدے سے استعفیٰ دے دیا اور علیم خان کے استعفے کے بعد ثابت ہوا کہ پی ٹی آئی اور دیگر جماعتوں کے سیاسی کلچر میں فرق ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں