سابق وزیراعظم نواز شریف کے خلاف فلیگ شپ اور العزیزیہ ریفرنسز میں آج فیصلہ محفوظ کیے جانے کا امکان ہے

رسائی نیوزنمائندہ خصوصی اسلام آباد: احتساب عدالت میں فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت جاری ہے جب کہ سابق وزیراعظم نواز شریف کمرہ عدالت میں موجود ہیں اور ان کے وکیل خواجہ حارث نے عدالت میں نئی دستاویزات پیش کردیں۔خواجہ حارث کی جانب سے پیش کردہ نئی دستاویزات برطانیہ میں حسن نواز کی کمپنیوں سے متعلق ہیں جو لینڈ رجسٹریشن ڈپارٹمنٹ سے تصدیق شدہ ہیں۔خواجہ حارث نے استغاثہ کے حتمی دلائل کے بعد جوابی دلائل دیتے ہوئے کہا کہ جے آئی ٹی رپورٹ تفتیشی رپورٹ نہیں اور اس پر تو لکھا ہے یہ تفتیشی رپورٹ ہے جب کہ اس رپورٹ کا نام ہی مشترکا تحقیقاتی ٹیم کی تفتیشی رپورٹ ہے۔نیب پراسیکیوٹر اصغر اعوان نے گزشتہ روز اپنے حتمی دلائل مکمل کیے، اس سے قبل نواز شریف کے وکیل خواجہ حارث نے پیر کے روز اپنے حتمی دلائل مکمل کیے تھے۔سپریم کورٹ کے احکامات کی روشنی میں احتساب عدالت کو فلیگ شپ اور العزیزیہ ریفرنس کا فیصلہ 24 دسمبر تک سنانا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں