سابق وزیراعظم نواز شریف پاکپتن میں دربار اراضی پر تعمیرات کیس کے سلسلے میں سپریم کورٹ میں پیش ہوگئے۔

رسائی نیوز نمائندہ خصوصی اسلام آباد:چیف جسٹس پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں جسٹس اعجازالاحسن اور جسٹس فیصل عرب پر مشتمل سپریم کورٹ کا 3 رکنی بنچ پاکپتن دربار اراضی ازخود نوٹس کیس کی سماعت کررہا ہے۔ سابق وزیراعظم نواز شریف عدالتی حکم پر ذاتی طور پر پیش ہوگئے ہیں۔ اس کے علاوہ مریم اورنگزیب، ایاز صادق، رانا ثناء اللہ اور چوہدری تنویر سمیت مسلم لیگ (ن) کے دیگر رہنما بھی کمرہ عدالت میں موجود ہیں۔ عدالت عظمیٰ نے 2015 میں دربار اراضی پر دکانوں کی تعمیر کا از خود نوٹس لیا تھا، نواز شریف پر 1985 میں بطور وزیر اعلیٰ اوقاف کی زمین واپسی کا نوٹی فکیشن واپس لینے کا الزام ہے۔ گزشتہ سماعت پر عدالت عظمیٰ نے نواز شریف کا جواب مسترد کرتے ہوئے ریمارکس دیئے تھے کہ وہ خود آکر وضاحت دیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں