تحقیق و ترقی کے شعبوں میں سست روی کے باعث امریکا بحیثیت قوم اپنا مقام کھورہا ہے، حالیہ برسوں میں چین نے معاشی لحاظ سے ہمارے مقابلے میں انفراسٹرکچر پر تین گنا زیادہ خرچ کیا ، امریکی صدر

واشنگٹن۔: امریکی صدر جو بائیڈن نے کہا ہے کہ تحقیق و ترقی کے شعبوں میں سست روی کے باعث امریکا بحیثیت قوم اپنا مقام کھورہا ہے، حالیہ برسوں میں چین نے معاشی لحاظ سے ہمارے مقابلے میں انفراسٹرکچر پر تین گنا زیادہ خرچ کیا ،کانگرس کے ارکان انفراسٹرکچر اور سماجی بہبود کے منصوبوں کےلئے 32 کھرب ڈالر فراہم کرنے کے ان کے منصوبوں کی حمایت کریں بصورت دیگر وہ چین اور اس جسے ان دیگر ممالک سے پیچھے رہ جائیں گے جو ان شعبوں میں بھاری سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔

امریکی ریاست مشی گن کے شہر ہوویل کے ٹریڈ یونین ٹریننگ سنٹر میں اپنے خطاب میں صدر نے کہا کہ ان کی طرف سے کانگرس میں متعارف کرائے جانے والے بلز کا دائیں اور بائیں بازو اور اعتدال پسندوں اور ترقی پسندوں کے درمیان کشمکش سے کوئی تعلق نہیں اور نہ ہی ان کا مقصد امریکی شہریوں کو ایک دوسرے کے مد مقابل لا کھڑا کرنا ہے بلکہ ان کا تعلق مسابقت بمقابلہ پیچھے رہ جانے اور مواقع بمقابلہ تباہی کے تصور سے ہے۔

صدر بائیڈن نے کہا کہ ان بلز کی مخالفت کرنا امریکا کے زوال میں کردار ادا کرنےکے مترادف ہے۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ امریکی صدر جن کی جماعت کو کانگرس میں ارکان کی بہت کم تعداد کے ساتھ برتری حاصل ہے کو ان بلز پر اپنی ہی جماعت کے ارکان کانگرس کی مخالفت کا بھی سامنا ہے جس کے باعث انہیں ملک میں انفراسٹرکچرکی بہتری پر 12 کھرب ڈالر کی خطیر رقم خرچ کرنے کے بل اور سماجی بہبود کے منصوبوں پر 20 کھرب ڈالر خرچ کرنے کے بلز کی کانگرس سے منظوری میں مشکلات کا سامنا ہے۔

صدر بائیڈن نے کہا کہ امریکا نے تحقیق اور ترقی کے شعبوں میں دنیا کی قیادت کی لیکن اب ہم سست پڑ چکے ہیں۔ اس سست روی کے نتیجے میں بحیثیت قوم اپنا مقام کھورہے ہیں۔ صدر نے اعداد و شمار سے بتایا کہ تعلیم اورانفراسٹرکچر کے شعبوں میں امریکا دیگر ترقی یافتہ ممالک سے بہت پیچھے رہ گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ حالیہ برسوں میں چین نے معاشی لحاظ سے ہمارے مقابلے میں انفراسٹرکچر پر تین گنا زیادہ خرچ کیا ۔

صدر نے کہا کہ انفراسڑکچر اورسماجی بہبود کے شعبوں کے لئے خطیر فنڈز کی فراہمی کے بلز کو امریکی عوام کی بڑی تعداد کی حمایت حاصل ہے تاہم کانگرس سے ان بلز کی منظوری میں انہیں سخت مشکلات کا سامنا ہے اور ان کی اپنی جماعت کے ارکان کانگرس کی طرف سے ان بلز کی مخالفت نے ان مشکلات میں اضافہ کر دیاہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں