بھارتی گلوکار نے اسلام کے لیے موسیقی کو خیرباد کہہ دیا

حیدرآباد: معروف بھارتی گلوکار و ریپر روحان ارشد نے اسلام کے لیے موسیقی کو خیرباد کہہ دیا۔ بھارتی ریاست حیدر آباد سے تعلق رکھنے والے گلوکار روحان ارشد نے موسیقی اور شوبز کی دنیا کو چھوڑنے کا اعلان اپنے یوٹیوب چینل پر کیا اور بتایا کہ میوزک اسلام میں حرام اور ممنوع ہے اس لیے وہ موسیقی کو چھوڑ رہے ہیں۔ گلوکار روحان ارشد نے کہا کہ میں اپنے فیصلے پر پُر اعتماد ہوں اور الحمداللہ بہت خوش ہوں۔ میں اب سے میوزک ویڈیوز اور موسیقی سے وابستہ کوئی بھی چیز نہیں بناؤں گا۔ مجھے اللہ پر بھروسہ ہے اور یقین ہے کہ موسیقی کی دنیا کو خیر باد کہنے کے بعد اللہ مجھے کسی اور چیز میں مقام دے گا اور حلال طریقے سے کامیابی دے گا۔

سابق گلوکار روحان نے کہا کہ وہ صرف موسیقی کو خیرباد کہہ رہے ہیں لیکن یوٹیوب کو نہیں چھوڑ رہے اور یوٹیوب کے ذریعے اپنے مداحوں سے رابطے میں رہیں گے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے اپنے پرستاروں سے مشورہ بھی مانگا کہ وہ یوٹیوب پر آگے کیا کریں۔ اس کے علاوہ روحان ارشد نے مداحوں سے درخواست کی کہ میوزک بناتے وقت جو سپورٹ آپ نے مجھے کی ویسی ہی سپورٹ مجھے اب بھی کیجئے گا۔

روحان ارشد کے اس فیصلے پر لوگ انہیں مبارکباد دے رہے ہیں اور اپنی مکمل حمایت کا یقین دلانے کے ساتھ انہیں مستقبل میں نظم اور نعت پڑھنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔ واضح رہے کہ روحان ارشد چند سال قبل اس وقت مشہور ہوئے تھے جب ان کا گانا ’’میاں بھائی‘‘ ریلیز ہوا تھا۔ اس ویڈیو پر اب تک 500 ملین سے زاید ویوز آچکے ہیں۔

دوسری جانب یہ پہلے فنکار نہیں ہیں جنہوں نے مذہب کے لیے شوبز انڈسٹری کو خیرباد کہا ہے بلکہ اس سے قبل اداکارہ زائرہ وسیم اور ثنا خان بھی اسلام کے لیے شوبز کو چھوڑ چکی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں