ایان علی نے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری چیلنج کردئیے

رسائی نیوز راولپنڈی: راولپنڈی کی کسٹم عدالت میں کرنسی اسمگلنگ کیس میں ماڈل ایان علی کیس کی سماعت ہوئی، کسٹم جج کے چھٹی پر ہونے کے باعث سماعت ڈیوٹی جج بینکنگ عدالت نے کی، دوران سماعت ملزمہ ایان علی نے نئے وکیل کے توسط سے اپنے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری کو چیلنج کردیا۔

ایان علی کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کرتے ہوئے کہا ایان علی کی بیماری کی درخواست اور میڈیکل سرٹیفیکیٹ پیش کرنے کے باوجود وارنٹ گرفتاری جاری کردئیے گئے، ایان علی کے نئے وکیل نے عدالت کو یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ملزمہ 8 دسمبر تک عدالت میں پیش ہوجائیں گی۔

عدالت نے ملزمہ ایان علی کی درخواست سماعت کے لیے منظور کرتے ہوئےکسٹم ٹیم کو نوٹس جاری کردیا اور مقدمہ کی سماعت 8 دسمبر تک ملتوی کردی۔
ایان علی کے نئے وکیل نے ایکسپریس نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ایان علی کی صحت بہت بہتر ہوگئی ہے، وہ جلد پاکستان واپس آرہی ہیں۔

یاد رہے کہ ایان علی کے پرانے وکیل سردار لطیف کھوسہ کو باقاعدہ تبدیل کردیا گیا ان کی جگہ بیرسٹر سرفراز میتو اور افتخار باجوہ ایان علی کیس کے نئے ایڈووکیٹس مقرر ہوئے ہیں، دو رکنی وکلاء کی نئی ٹیم نے عدالت میں وکالت نامے پیش کیے۔

کیس کا پس منظر
ایان علی کو 14 مارچ 2015 کو اسلام آباد سے دبئی جاتے ہوئے بینظیر انٹرنیشنل ایئرپورٹ پر کرنسی اسمگل کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا اور ان کے پاس سے 6 لاکھ امریکی ڈالر برآمد ہوئے تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں