امت مسلمہ کو در پیش چیلنجز کے حل کے لیے مسلم ممالک کے مابین اتحاد اور یکجہتی ضروری ہے، سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر

اسلام آباد۔: سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ امت مسلمہ کو در پیش چیلنجز کے حل کے لیے مسلم ممالک کے مابین اتحاد اور یکجہتی ضروری ہے، پاک ایران اراکین پارلیمان دو طرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے میں اہم کردار ادا کر سکتے ہیں ۔بدھ کو وہ پارلیمنٹ ہائوس میں ایرانی پارلیمانی وفد سے بات چیت کرہے تھے۔ پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے ایرانی پارلیمان میں ایران-پاک دوستی گروپ کے سربراہ احمد امیر عبادی فرحانی کی سربراہی میں پاکستان کے دورے پر آئے ہوئے ایران کے پارلیمانی وفد نے سپیکر سے ملاقات کی ۔

ملاقات میں پاک- ایران تعلقات، خطے کی موجودہ صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے اہم امور پر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ سپیکر نے کہا کہ پاکستان اور ایران برادر اسلامی ہمسایہ ممالک ہیں اور دونوں ممالک کے مابین تعلقات مذہب، اخوت، تاریخ اور ہمسائیگی کی لازوال رشتوں میں بندھے ہوئے ہیں۔پارلیمانی سفارتکاری پاکستان اور ایران کے درمیان تعلقات کو مضبوط بنانے میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے ۔

دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں اضافہ علاقائی ترقی اور خوشحالی کے لیے ضروری ہے۔ تجارت اور توانائی کے شعبوں میں تعاون دونوں ممالک کے بہترین مفاد میں ہے۔دونوں ممالک کے درمیان تجارتی حجم میں اضافے کے لیے پاک ایران سرحد پر تجارتی سرگرمیوں پر خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت ایران سمیت تمام پڑوسی ممالک کے ساتھ دوستانہ تعلقات کو فروع دینے کے لئے کوشاں ہے۔

دنیا بھر میں مسلم امہ کو درپیش مسائل کے حل کے لیے مسلم ممالک کے درمیان اتحاد وقت کی اہم ضرورت ہے۔پارلیمانی سفارتکاری اور عوامی سطح پر رابطے دونوں ممالک کے درمیان اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ایرانی پارلیمانی وفد کا حالیہ دورہ دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ پارلیمانی تعلقات کو فروغ دینے میں اہم سنگ میل ثابت ہو گا۔

پاکستان اور ایران کے قانون ساز ادارے کے درمیان تعاون کو بڑھانے کی ضرورت ہے۔ایران پاکستان دوستی گروپ کے سربراہ احمد امیر آبادی فرحانی نے اسپیکر اسد قیصر کا ایران کے ساتھ گہری وابستگی کے جذبات کو سراہا اور کہا کہ ایران پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایران پارلیمانی اور اقتصادی تعاون کے ذریعے موجودہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کی خواہش رکھتا ہے۔علاقائی امن کے لیے پاکستان کا کردار قابل ستائش ہے۔دو طرفہ تعلقات کو مزید مستحکم بنانے کے لیے پارلیمانی رابطوں کا فروغ انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔

پاکستان اور ایران کو اللہ تعالیٰ نے بے پناہ قدرتی وسائل سے نوازا ہے۔ان وسائل کو دونوں ممالک کی عوام کی ترقی اور خوشحالی کے لیے بروئے کار لایا جا سکتا ہے۔ امت مسلمہ کے درمیان اتحاد کے لیے پاکستان کی کوشش قابل قدر ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں