الٹےقدم چلنے سےیادداشت بہترہوتی ہے

رسائی نیوز ویب ڈیسک:تحقیق سے یہ بات سامنے آئی ہے کہ کھڑے رہنے یا آگے بڑھنے والے افراد کے مقابلے میں اگر کچھ میٹر تک الٹا چلا جائے تو اس سے بہت کم وقت میں حافظہ بہتر ہوتا ہے اس کے لیے ماہرین نے ایک دلچسپ تجربہ کیا۔ شرکا کو تین گروپوں میں تقسیم کیا گیا، ایک کو کھڑا رہنے کو کہا گیا، دوسروں کو کچھ دیر آگے چلنے کا کہا گیا اور تیسرے گروہ کو الٹے قدموں پیچھے چلنے کا کہا گیا۔ اس کے بعد سب کو ایک سوال نامہ دیا گیا جس میں ویڈیو کے بارے میں 20 سوالات پوچھے گئے تھے۔ ان میں سے جن افراد نے الٹے قدموں چلنے کی مشق کی تھی انہوں نے آگے چلنے اور کھڑے رہنے والے افراد کے مقابلے میں دو سوالات کے جوابات زیادہ دئیے۔ ایک اور دلچسپ تجربے میں شرکا کو ٹرین میں بٹھایا گیا اور کچھ اس طرح رکھا گیا کہ وہ ٹرین چلنے کی سمت میں یا اس کے مخالف انداز میں بیٹھے اور یہاں بھی ان افراد کی یادداشت بہتر پائی گئی جو آگے چلتی ہوئی ٹرین میں پیٹھ کرکے بیٹھے تھے گویا وہ الٹی سمت جارہے ہوں۔ اس کے بعد سائنس دانوں نے بدل بدل کر یادداشت کے پانچ مختلف ٹیسٹ لیے اور ہر ایک میں الٹے قدموں چلنے والوں کی مختصر مدتی یادداشت کو بقیہ افراد سے بہتر پایا۔ ماہرین کا خیال ہے کہ ٹائم اینڈ اسپیس کا تصوردماغ پر اثر انداز ہوکر ہمارے حافظے پر اثر ڈالتا ہے۔ ماہرین اب بھی اس کی وجہ جاننے سے قاصر ہیں اور اس پر مزید تحقیق کررہے ہیں تاہم دیگر ماہرین نے اس تحقیق کو خوش آئند قرار دیا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں